Friday, December 15, 2017

front haircut japanese for stylish girls

Japanese hairstyles for girls all have the same basic structure. They are composed of a lot of layers, volume on top that tapers toward the bottom with fringe or bangs. The more modern Japanese girls' hairstyles come in virtually any length, but traditionally they are long and straight. Another major part of the Japanese hairstyles are buns. There are several different sub-genres to Japanese popular culture, and the basic hairstyle techniques are influenced by them. Japan is very fashion-forward so there are many different styles to choose from.








ملیکا شراوت کروڑوں کی مقروض ہو گئیں

urممبئی(آئی این پی) مایہ ناز بالی ووڈ اداکارہ ملیکا شراوت اور ان کے شوہر پیرس میں ایک کروڑ سے زائد روپے کے مقروض ہیں جس کے باعث انہیں فلیٹ سے بے دخل کیے جانے کا خدشہ ہے۔
برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق ملیکا شراوت اور ان کے شوہر پیرس میں جس فلیٹ میں رہائش پذیر ہیں، کرائے کی مد میں اس کے 80 ہزار یورو یعنی 94551 امریکی ڈالر کے مقروض ہیں۔اداکارہ کے وکیل کا کہنا ہے کہ فلیٹ کا کرایہ ادا نہ کرنے پر گزشتہ برس ملیکا شروات بلڈنگ میں تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے حوالے سے اپنے غصے کا اظہار کرنا چاہتی ہیں۔دوسری جانب فلیٹ کے مالک کی جانب سے ملیکا شراوت کے فرنیچر اور قیمتی گھڑی کو ضبط کرنے کی درخواست دائر کی گئی ہے۔

”آج کے فیصلے سے ثابت ہو گیا کہ نوازشریف۔۔۔“ مریم نواز بھی میدان میں آ گئیں،ایسی بات کہہ دی کسی کو یقین نہ آئے

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپریم کورٹ نے عمران خان کواہل اور جہانگیر ترین کو نااہل قرار دے دیاہے جس پر نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز شریف نے رد عمل دیتے ہوئے کہاہے کہ آج کے فیصلے نے اس تاثر پر مہر تصدیق ثبت کر دی ہے کہ نوازشریف کے ساتھ نا انصافی ہوئی ہے ۔
ٹویٹر پر جاری پیغام میں مریم نوازشریف کا کہناتھا کہ اب شک کی کوئی گنجائش نہیں کہ کسی بھی سازش ، دھرنوں اور احتساب نامی انتقام کا ہدف صرف نوازشریف ہے کیونکہ عوام کا اصل نمائندہ صرف نوازشریف ھے ،آج کے فیصلے نے اس تاثر پر مہر تصدیق ثبت کر دی ہے کہ نواز شریف کے ساتھ ناانصافی ہوئی ہے ،آج جانبدارانہ احتساب اور احتساب کے نام پر انتقام سے تمام پردے اٹھ گئے ہیں۔ ثابت ہو گیا کہ اقامہ صرف بہانہ تھا، نواز شریف نشانہ تھا۔


ویرات کوہلی اور انوشکا نے ہنی مون کی تصویر شیئر کر دی ،انتہائی خوبصورت مناظر

ممبئی(ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارتی کھلاڑی ویرات کوہلی اور انوشکا شرما شادی کے بعد ہنی مون منا رہے ہیں اور انہوں نے اپنی تصویر مداحوں کے ساتھ شیئر کرکے سب کو حیران کر دیاہے ۔
بھارتی ویب سائیٹ ’این ڈی ٹی وی ‘کے مطابق انوشکا شرما نے تصویر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ایسا لگ رہا ہے کہ وہ جیسے جنت میں ہیں۔سیلفی میں دیکھا جاسکتا ہے کہ اداکارہ انوشکا کے ہاتھوں کی مہندی کا رنگ بھی پھیکا نہیں پڑا ہے اور ان کی انگلیوں میں شوہر کی جانب سے تحفہ دی گئی قیمتی انگوٹھی بھی موجود ہے۔شادی شدہ جوڑے نے اپنے ہنی مون کی جگہ کو بھی شادی کی طرح خفیہ رکھا ہے لیکن برفیلے پہاڑ دیکھ کر اندازہ لگانا مشکل نہیں ہے کہ یہ جوڑی یورپ میں ہی کہیں مقیم ہے۔
واضح رہے کہ ویرات کوہلی اور انوشکا شرما گزشتہ دنوں اٹلی میں رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئے تھے۔ دونوں کی شادی کی تقریبات خفیہ انداز میں ہوئی ہیں لیکن انوشکا اور ویرات نے 11 دسمبر کو ایک ساتھ ٹوئٹ کرکے اپنے چاہنے والوں کو شادی کی خبر دی تھی۔

Blezer for man image latest design

Stylish Blezer designs for man. 2018 winter new men collar sching design blazer coat suits mens man jacket blazer mens slim fit suits with pants wedding groom. Latest coat design se wear dress gold for men singers blazers new aliexpress autumn winter casual men s ed blue denim suit blazer jackets formal dress designs suits collar slim blazers for from best quality. New style men blezer 2017-2018 suit brand casual jacket. Best and stylish Blazer for man image latest design. Latest coat designs leather patch blazers urban clothing pea coats at 2017. New design man suits slim fit long sleeve business mens blazer wedding. Blazer for man image latest design.Best winter blazer designs for beautiful man. This so latest and new fashion designs blazer in the world.









راتوں رات شہرت کی بلندیوں کوچھونےو الی اداکارہ اروشی شرماآج کہاں اورکس حال میں ہیں ،جان کرآپ بھی دنگ رہ جائیں گے

 
معروف بھارتی اداکارہ اروشی شرما13 جولا‎ئی 1984کوبھارت کے شہرنئی دہلی میں پیداہوئیں۔انہوں نے اپنے فنی کیرئیرکاآغازمختلف اشتہاروں سے کیا۔
ان کی پہلی فلم نقاب 13جولائی 2007کوریلیز ہوئی۔انہوں نے اپنے ساتھی اداکارسچن جوشی سے فروری 2012میں شادی کی ۔حالیہ تصاویرمیں وہ اتنی موٹی لگ رہی ہیں کہ ان کوپہچاننامشکل ہوگیاہے ۔

مسلسل 100 سال سے آگ اگلنے والی بھارتی کان

ئی دہلی: بھارتی ریاست جھاڑکھنڈ کے ضلعے دھنباد میں واقع جھاڑیا کا شمار ملک میں کوئلے کی سب سے بڑی کانوں میں ہوتا ہے۔ اس کی حیرت انگیز بات یہ ہے کہ یہ جگہ مسلسل 100سال سے دہک رہی ہے۔
جھاڑیا میں کوئلے کی کان کا بلاک لگ بھگ ایک سو مربع میل پر پھیلا ہوا ہے جہاں انیسویں صدی کے آغاز میں انگریزوں نے کوئلہ نکالنا شروع کیا تھا۔ پھر 1916 میں یہاں پہلی آگ بھڑک اٹھی اور 1980 تک 70 مختلف مقامات پر آگ لگ چکی تھی جسے اب تک نہیں بجھایا گیا ہے۔ توقع کی جارہی تھی کہ آگ ازخود بجھ جائے گی لیکن 1973 میں یہ امید بھی دم توڑگئی۔اس سال ریاستی کوئلہ اتھارٹی کے ذیلی ادارے بھارت کوکنگ کول لمیٹڈ (بی سی سی ایل) نے اوپن کاسٹ کان کنی شروع کی جو کوئلے کی بڑی مقدار حاصل کرنے کا ایک آزمودہ طریقہ بھی ہے۔ امید تھی کہ اس طرح کوئلے سے دہکتی ہوئی آگ ختم ہوجائے گیلیکن اس کا الٹا نتیجہ نکلا۔اس سے قبل مقامی اور غیرتربیت یافتہ مزدور پہلے ہی جگہ جگہ سرنگیں کھو چکے تھے جن سے سرنگیں وجود میں آئی تھیں۔ ان سرنگوں سے سارا کوئلہ نکال لیا گیا تھا لیکن کچھ مقدار موجود تھی۔ جب کمپنی نے اوپن کاسٹ مائننگ شروع کی تو اندر ہوا نے اپنا راستہ بنالیا اور آگ مزید بھڑک اٹھی۔
اس کے بعد کوئلے کی کان سے 60 فٹ بلند شعلے بھی دیکھے گئے اور کوئلہ جل جل کر آگ ہوتا چلاگیا۔ اندازہ ہے کہ ان کانوں میں اب تک 3 کروڑ 70 لاکھ ٹن کوئلہ جل چکا ہے جس کی قیمت اربوں ڈالر ہے۔ جبکہ نیچے موجود قریبا ڈیڑھ ارب ٹن کوئلہ پہنچ سے دور ہوگیا کیونکہ اوپر آگ کا راج ہے۔ اب بھارتی وزیرِاعظم نریندرمودی اور موجودہ حکومت نے اس مسئلے کو حل کرنے کی بجائے صرف اس سے کوئلہ نکالنے پر اکتفا کیا ہے اور وہ آگ بجھانے کی بجائے کوئلہ نکالنے کے لیے بے چین ہیں۔
جھاڑیا کے قریبی گاؤں بھلن بریری میں رہنے والے لوگ اس علاقے کو جہنم کہتے ہیں۔ مقامی باشندے محمد نسیم انصاری نے بتایا کہ ’ زمین اتنی گرم رہتی ہے کہ جوتوں کے ساتھ وہاں چلنا ناممکن ہوتا ہے۔ اکثرافراد یہاں بیمار ہوچکے ہیں لیکن وہ روزگار اور کھیتی باڑی کی وجہ سے اس علاقے میں رہنے پر مجبور ہیں،‘۔
مسلسل آگ سے زہریلے ذرات اور مضر گیسیں نکل رہی ہیں جو علاقے کے لوگوں کی صحت برباد کررہی ہیں۔ یہاں آنے والے ایسٹ جارجیا اسٹیٹ کالج کے ارضیات داں گلین اسٹریچر نے بتایا کہ مختلف مقامات پر ہائیڈروکاربنز کے 40 سے 50 مختلف مرکبات ملے ہیں ۔ ان کی اکثریت زہریلی ہے اور کینسر کی وجہ بھی بن رہے ہیں۔
مٹی ڈالنے اور مختلف گیسوں سے آگ بجھانے کی جو کوشش کی گئی وہ اب تک ناکام رہی ہے۔

Google+ Badge

Contact Form

Name

Email *

Message *

Popular Posts